hot coffee cup

Coffee benefits-An overview of coffee

coffee and its benefits

 
 
 کافی پینا ایک اچھا قدم ثابت ہو سکتا ہے خاص کر تب جب آپ دفتر میں کام کر کر کے تھکاوٹ کا شکار ہو جاتے ہیں۔ اس وقت کافی پینا آپکے موڈ کو نا صرف خوشگوار کرتا ہے بلکہ آپکے اند ر ایک چستی کی لہربھی دوڑ جاتی ہے۔
coffee benefits
کافی پینا آپ کو سارا دن چست رکھ سکتا ہے۔ موجودہ دور میں کافی سارے مشروبات میں بہت سارے صحت کے فوائد ثابت ہوئے ہیں جو آپ کو مصروف دن میں گزارنےکے لیے درکا انرجی فراہم کر سکتے ہیں۔ مطالعات سے پتہ چلا ہے کہ کافی میں غذائی اجزاء شامل ہیں جو آپ کو کینسر ، دل کی بیماری اور جگر کو پہنچنے والی نقصان جیسی جان لیوا بیماریوں کے امکان کو کم کرتے ہیں۔
 
آپ کو یہ سمجھنے میں مدد کرنے کے لئے کہ کافی آپ کے جسم کے لیے  کیا کرسکتی ہے ، یہاں کافی کے 7 قدرتی صحت سے متعلق فوائد ہیں جو آپ کو کافی کی افادیت سمجھانے کےلیے کافی ہیں۔
کافی پینے سے فری ریڈیکل سے لڑا جا سکتا ہے ۔ کافی اینٹی آکسیڈینٹ سے بھر پور ہے جو جسم کو فری  ریڈیکلز کے مضر اثرات سے بچاتا ہے۔ فری ریڈیکلز ایسے  الیکٹران ہیں جو جلد کی عمر بڑھانے  والے خلیوں اور کینسر اور دمہ جیسی متعدد بیماریوں کا باعث بنتے ہیں۔ اینٹی آکسیڈینٹ ان نقصان دہ مرکبات کا مقابلہ کرتے ہیں جس سے خلیوں کو ہونے والے نقصان کی اصلاح ہوسکتی ہے اور جسم کو صحت مند رکھنے کے لئے نئے صحت مند خلیے تیار کیے جاتے ہیں۔
مشروبات سے جسم کی میٹابولک کی شرح میں اضافہ ہوتا ہے اور کولیسٹرول کو کم کرنے میں مدد ملتی ہے جس کی وجہ سے وزن کم کرنا آسان ہو جاتا ہے۔
 کافی اعصابی خلیوں کو بھی متحرک کرتی ہے جس سے جسمانی کارکردگی بہتر ہوتی ہے جس کی مدد سے آپ زیادہ مؤثر طریقے سے ورزش کرسکتے ہیں۔
دل کی بیماریوں جیسے کارونری دل کی بیماریوں کو ایٹروسکلروسیس کی وجہ سے لاحق ہوتا ہے ، ایک ایسی بیماری جس میں شریانوں میں روکاوٹ پیدا ہو جاتی ہے جس کی وجہ سے وہ تنگ ہوجاتے ہیں اور دل اور جسم کے دیگر حصوں تک آکسیجن سے بھرپور خون لے جانے میں مشکل پیش آتی ہے۔کافی میں موجود اجزاء اس کا باعث بننے والے کولیسٹرول کو کم کرتے ہیں جس کی وجہ سے خون کی شریانوں میں خون کی گردش رواں رہتی ہے۔
کافی کا باقاعدگی سے پینا جگر کے کینسر اور دیگر جگر کے حالات کو روکتا ہے ۔مطالعات سے پتہ چلا ہے کہ ایک دن میں ایک سے تین کپ کافی پینے سے جگر کی بیماریوں میں اضافہ سست ہوجاتا ہے کیونکہ یہ جگر کے خامروں کی سطح کو کم کرتا ہے جو جگر میں سوزش اور خلیوں کے نقصان کی نشاندہی کرتا ہے۔
 کافی میں حیاتیاتی مرکبات ہوتے ہیں جو دماغی افعال کو فروغ دیتے ہیں جس کی مدد سے آپ زیادہ توجہ مرکوز کرسکتے ہیں اور اپنی یادداشت کو بہتر بنا سکتے ہیں۔
بیماری اس وقت ہوتی ہے جب جسم انسولین مزاحم بن جاتا ہے۔ مطالعات سے پتہ چلتا ہے کہ کافی کی زیادہ استعمال سے انسولین کی حساسیت میں بہتری آتی ہے جس سے جسم کو انسولین کو موثر طریقے سے استعمال کر پاتا ہے۔ مزید برآں ، کافی بیماری کی نشوونما کو روک سکتی ہے. کیونکہ یہ چربی جلانے اور بلڈ پریشر کے ضوابط میں مدد کرتا ہے۔ موٹاپا اور ہائی بلڈ پریشر ٹائپ 2 ذیابیطس کے دو اہم خطرہ ہیں۔
یہ صرف خوشبودار اور کافی کا مزیدار ذائقہ ہی نہیں ہے جو آپ کے مزاج کو بہتر بناتا ہے۔ مشروبات میں اصل میں ڈوپامین نامی ایک خاص ہارمون ہوتا ہے جو خوشگوار احساس کے ساتھ وابستہ ہے جو ہمیں خوشی کا تجربہ کرتا ہے۔
 
نوٹ: کافی ایک حد تک پی جانی چاہیے تب ہی یہ صحت کے لیے بہتر (coffee benefits)ہے۔

Related Posts

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *